Sports

PSL4: Islamabad United vs Quetta Gladiators

PSL4: Islamabad United vs Quetta Gladiators

PSL4: Islamabad United vs Quetta Gladiators

اسلام آباد یوناٹڈ بمقابلہ کوئٹہ گلاڈیئٹرز

پی ایس ایل کا چھٹا میچ دفاعی چمپئن اسلام آباد یونائٹڈ اور کوئٹہ گلاڈیئٹرز کے درمیان ہوا۔

کوئٹہ نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا۔

اسلام آباد کی جانب سے لیوک رونکی، جو ہمیشہ جارحانہ اور اچھی بیٹنک کرتا ہے اسکے ساتھ رضوان حسین نے شروع کی۔ کوئٹہ کی جانب سے سہیل تنویر نے بالنگ شروع کی۔

اور کیا بالنگ تھی۔ پہلی ہی بال پر خطرے کی گھنٹی رونکی کو بغیر کوئی اسکور کیے احمد شہزاد کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کرا دیا۔ اسلام آباد کی پہلی ہی بال پر وکٹ اڑ گئی۔ اس موقع پر اسلام آباد نے بیٹنگ میں تبدیلی کی اور شاداب خان کو تیسرے نمبر پر بھیج دیا۔ مگر یہ موو کوئی اچھا ثابت نہ ہوا اور شاداب تنویر کی چھٹی بال پر تنویر ہی کو کیچ دے بیٹھا – پہلے اوور میں جو میڈن تھا اور 2 وکٹ آؤٹ۔

اسلام آبار کی مشکلات میں مزید اضافہ اس وقت ہوا جب 8 کے اسکور پر رضوان حسین بھی محمد نواز کے ہاتھوں ایل بی ڈبلیو ہو گیا۔ چمپئین مشکلات کا شکار۔۔۔

ڈیلپورٹ اور طلعت حسین کے درمیان پانچاس رنز کی قابلِ ذکر پارٹنرشپ ہوئی جسے فواداحمد نے تنویرسہیل کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کروا دیا۔

آصف علی اور طلعت حسین نے اننگ کو پھر سے سہارا دینے کی کوشش کی مگر 76 کے اسکور پر حسین طلعت فواداحمد کے ہاتھوں بولڈ ہو گیا۔ فہیم اشرف بھی جلد ہی وکٹ کھو بیٹھا جب 82 کے اسکور پر احمدشہزاد نے فواداحمد کی بال پر کیچ پکڑ لیا۔

آصف علی جو ابھی تک کریز پر موجود تھا اس نے وین پارنل کی ساتھ ملکر اسکور کو 117 تک پہنچا دیا جب ایک بار پھر سہیل تنویر کی بال پر محمد نواز کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گیا، آسف نے 36 رنز بنائے۔ سمیت پٹیل نے وین پارنل کے ساتھ ملکر اچھی پارٹنرشپ دی اور خاص کر پارنل نے مسلسل چوکے لگاتے ہوئے اپنا اسکور 41 تک لے گیا مگر 144 کے اسکور پر پارنل بھی سہیل تنویر کی بال پر عمراکمل کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گیا۔ آخری اوورز میں سمیت پٹیل نے چند چوکے لگا کر اسکور 157 تک پہنچا دیا۔

ایک وقت میں جب 8 پر 3 وکٹس گر چکے تھے تو لگتا تھا اسلام آباد بمشکل ہی کوی بڑا اسکور کر پائے گا۔ مگر 157 تک لے جانا بہت بڑی بات تھی۔ سہیل تنوہر نے پہلی بار 4 وکٹ لیئے اور فوادآحمد کے 3 وکٹ تھے۔

کوئٹہ کی اننگ کی ابتدا بھی کوئی خاص اچھی نہیں تھی اور احمدشہزاد ایکبار پھر ناکام رھا اور چھ بال پر صرف 2 رنز بنا سکا۔ سات کے اسکور پر پہلی وکٹ گر گئی۔ رائیلی روسو نے ایک دو جارحانہ اسٹروک کھیلے مگر چھ گیندوں پر 10 رنز بنا کر وہ بھی رومان رئیس کی بال پر محمد سمیع کے ہاتھوں آؤٹ ہو گیا۔ 

عمراکمل بیٹنگ کے لیے آیا۔ شین وارن کو ایک ایک بہت بڑی زندگی ملی جب 27 کے اسکور پر محمدسمیع نے اسے بولڈ کر دیا، مگر بال کرانے سے پہلے سمیع نے اپنے دائیں پاؤں سے وکٹ گرا دی تھی۔ امپائر نے نو بال دی اور ایک فری ہٹ! یہ کوئٹہ کی خوش قسمتی تھی اور اسلام آباد کی بدقسمتی کیونکہ اسکے بعد شین وارن اور عمراکمل نے زبردست جارحانہ انداز اپناتے ہوئے اسکور 94 تک پہنا دیا۔ اس موقع پر عمراکمل 28 بالوں پر 44 رنز بنا کر ڈیلپورٹ کے ہاتھوں کیچ ایند بولڈ ہو گیا۔

مگر شین وارن کی اننگ جاری رہی اور 55 بالوں پر 6 چوکوں اور 4 چکھوں کی مدد سے 81 رنز بنا کر ناٹ اؤٹ اور مین آف دی میچ قرار پایا۔ سرفراز نے 15 رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوا۔ کوئٹہ کی فتح بہت زبردست تھی۔

نتیجہ: کوئٹہ 7 وکٹ سے جیت گیا

PSL4: Islamabad United vs Quetta Gladiators

Pakistan Domestic Cricket - History

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں،۔ ایک پردسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکے قلم خونِ جگر کی روشنائی سے لکھتا ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ تلخ ہے، ہضم مشکل سے ہوتی ہے، پردسی جو اپنے دل کا اظہار شاعری میں بھی کرتا ہے

Add Comment

Click here to post a comment