Sports

Pakistan Domestic Cricket – History

Pakistan Domestic Cricket - History

Pakistan Domestic Cricket – History

پاکستان ڈومیسٹک کرکٹ: ایک مختصر تاریخ

پاکستان سپر لیگ کے چوتھے سیزن کا آج آغاز ہو رہا ہے۔

پہلا میچ لاہورقلندرز اور دفاعی چمپئن اسلام آباد یونائیڈڈ کے مابین دبئی میں کھیلا جا رہا ہے۔

تاریخ

پاکستان کا مقبول ترین کھیل کرکٹ ہے۔ جس کی ابتدا موجودہ پاکستان میں آزادی سے پہلے سے ہے۔ آزادی کے بعد غیر منظم کلب میچز منقعد ہوتے رہے۔

یکم مئی 1949 کو پاکستان کرکٹ بورڈ کے تشکیل ہوئی، اور اسکے پرچم تلے کلب میچز ہوتے رہے۔ پہلی نیشنل چمپئین شپ 1953 کو منقعد ہوئی۔

27-29 دسمبر کو لاہور میں پنجاب اور سندھ کے مابین پہلا فرسٹ کلاس میچ ہوا۔ 6-8 فروری 1948 کو پنجاب گورنرزالیون اور پنجاب یونیورسٹی کے مابین لاہور میں میچ ہوا – اسکے بعد ہندوستان کی تقسیم ہوئی، اور فرسٹ کلاس کرکٹ رک گیا۔

مارچ 1948 میں لاہور میں واحد فرسٹ کلاس میچ پنجاب گورنرزالیون اور پنجاب یونیورسٹی کے مابین ہوا۔ اس سال کی اہم بات ویسٹ انڈیز کا غیر آفیشل دورۂ پاکستان تھا، اور پاکستان کا غیرآفیشل دورۂ سیلون (موجودہ سری لنکا) تھا۔ اس دورے کی کپتانی سعیداحمد نے کی۔

1949-50 میں کوئی کلب میچ نہ ہوا، جبکہ اس سیزن میں کامن ویلتھ الیون اور سیلون کی ٹیم نے غیرآفیشل دورے کیے جس میں 5 فرسٹ کلاس میچز کھیلے گئے۔

1952 میں پاکستان کو ٹیسٹ کیپ کا درجہ ملا اور پہلا سرکاری دورہ کیا۔ یہ دورہ انڈیا کا تھا جس میں 5 ٹیسٹ میچز کھیلے گئے۔ یہ ٹیسٹ میچز نئی دھلی، لکھنؤ، بمبئی، مدراس اور کلکتہ میں کھیلے گئے، جس میں پہلے میچ میں انڈیا ایک اننگ سے جیتا اور دوسرا میچ پاکستان نے ایک ایک اننگ سے جیتا۔ فضل محمود کی تباہ کن باؤلنگ تھی جس میں 52 پر 5 اور 42 پر ساتھ کھلاڑی آؤٹ کیے۔ تیسرا ٹیسٹ انڈیا جیتا جبکہ آخری دو میچ برابر رہے۔

نیشنل چمپئین شپ

1953-54 میں قائداعظم ترافی کا انقعاد ہوا، جسے بہاولپور نے جیت لیا۔ اہم کھلاڑی اس ٹورنامنٹ میں حنیف محمد تھے جنہوں نے 128.25 کی اوسط سے 513 رنز بنائے۔

درجہ ذیل ٹیبل میں قائداعظم ٹرافی کے چمپئنز پیش کیے گئے ہیں

Pakistan Domestic Cricket – History

چمپئینسال
بہاولپور1953-54
کراچی1954-55
-1955-56
بہاولپور1956-57
کراچی1958-59
کراچی1959-60
-1960-61
کراچی بلیوز1961-62
کراچی اے1962-63
کراچی بلیوز1963-64
کراچی بلیوز1964-65
-1965-66
کراچی1966-67
-1967-68
لاہور1968-69
پی آئی اے1969-70
کراچی بلیوز1970-71
-1971-72
ریلویز1972-73
ریلویز1973-74
پنجاب اے1974-75
نیشنل بنک1975-76
یونائیڈڈ بنک1976-77
حبیب بنک1977-78

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں،۔ ایک پردسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکے قلم خونِ جگر کی روشنائی سے لکھتا ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ تلخ ہے، ہضم مشکل سے ہوتی ہے، پردسی جو اپنے دل کا اظہار شاعری میں بھی کرتا ہے

Add Comment

Click here to post a comment