Meri Shairi Shab-o-Roz

Terey Shehar Mein Rehna

Meri Shairi: Terey Shehar Mein Rehna
Shehar

تیرے شہر میں رہنا اک عذاب ہے جاناں
تیری یادوں کا سلسلہ بے حساب ہے جاناں

میری غزلوں کی خوشبو، تیری باتوں کا جادو
مری بیاض میں پڑا تیرا گلاب ہے جاناں

تیرے وجود کا حسن ہے ان کلیوں کا پیرہن
میں کیسے بھلا پاؤں جو تیرا شباب ہے جاناں

ان گلیوں کی مانوسیت، ترے احساس کی خاصیت
تیری خوشبوؤں سے معطر ہر اک باب ہے جاناں

مسعودؔ

Shab-o-roz

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں ہے۔ ایک پردیسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکا قلم اس وقت لکھتا ہے دل درد کی شدت سے خون گشتہ ہو جاتا ہے اور اسکے خونِ جگر کی روشنائی سے لکھا ہوئے الفاظ وہ تلخ سچائی پر مبنی ہوتے ہیں جو ہضم مشکل سے ہوتے ہیں۔۔۔ مگر یہ دیوانہ سچائی کا زہر الگنے سے باز نہیں آتا!

Add Comment

Click here to post a comment

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Pegham Network

FREE
VIEW