Meri Shairi Shab-o-Roz

Meri Shairi: Taaron Bhari Raatein

تاروں بھری راتیں

تاروں بھرئ راتیں، یادوں میں تیری باتیں، دل کو ستائے سجنی
یاد میں تیری کیوں نہ تڑپوں، یاد تیری تڑپائے سجنی

دل کی پکار ہے تو ، گلوں کا نکھار ہے تو
تجھ کو دیا ہے دل ، میرا دلدار ہے تو
تو ہے میرا دلبر، تجھ کو دیا ہے دل پر
…چھوڑ نہ مجھ کو جانا

نام پہ تیرے عمر بتا دوں، تو جو عہد نبھائے سجنی
یاد میں تیری کیوں نہ تڑپوں، یاد تیری تڑپائے سجنی

تو ہے خدا کی نعمت، پیار کی ہے تو جنت
ساتھ تیرا پا کر، سنور گئی میری قسمت
تیرے سائے کی قسم ، تجھ کو نہ بھولیں گے ہم
..جب چاہو آزما لینا

قدموں میں تیرے دل کو بچھا دوں، چاہے اسے ٹھکرائے سجنی
یاد میں تیری کیوں نہ تڑپوں، یاد تیری تڑپائے سجنی

تاروں بھر راتیں، آنکھوں میں تیری باتیں، دل کو ستائے سجنی
یاد میں تیری کیوں نہ تڑپوں، یاد تیری تڑپائے سجنی

مسعود

Shab-o-roz

About the author

Masood

A hard speaking straightforward person, who has a brain, which works (alhamdolillah). A writer, poet and

Add Comment

Click here to post a comment