Meri Shairi Shab-o-Roz

Meri Shaairi: Aurat

Iffat Mein Hooron Sey
Iffat Mein Hooron Sey

.عورت

عفت میں حوروں سے بڑھ جاتی ہے مستور
پر آستینوں میں ہوتے ہیں سانپ ضرور

وجودِ زن ہی سے سجتا ہے دنیا کا مظہر
وجودِ زنِ عفیفہ ہے جنت کی حور

خلوتِ زندگی میں اسکی نمود ہے سازِ پُرسکون
اس طاہرہ کی فطرت میں نہیں ہے غرور

ثریا کا حسن ہے مشتِ خاک زیرِ پا مسلمہ
نہیں ہے نیک سیرت عورت سے جنت دُور

عشقِ عظمتِ طاہرہ ہے اک ایسی مے مسعوؔد
جس کے سرور میں ہے ترکِ پندارِ دنیاوقُصُور

مسعود

Shab-o-roz
Image of Shab-o-Roz

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں،۔ ایک پردسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکے قلم خونِ جگر کی روشنائی سے لکھتا ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ تلخ ہے، ہضم مشکل سے ہوتی ہے، پردسی جو اپنے دل کا اظہار شاعری میں بھی کرتا ہے

Add Comment

Click here to post a comment