Meri Shairi Shab-o-Roz

Meri Shairi: Adnan Ki Shaadi Per

Meri Shairi: Adnan Ki Shaadi Per

Meri Shairi: Adnan Ki Shaadi Per

عدنان کے لیے

اک نصیحت سنو میری عدنان میاں
شادی کر کے رہنا تم ملتان میاں

سیج ارمانوں کی سجانا جولائی کے ماہ میں
اور اوپر سے بند رکھنا روشندان میاں

کچھ خیال رکھنا قومی جی ڈی پی کا بھی
ذرا چھوٹا ہی رکھنا اپنا خاندان میاں

ہماری بھابی کا رکھنا تم خیال بہت
روزانہ صاف رکھنا تم پاندان میاں

قدم سے قدم ملا کے چلنا تم دونوں
تم بنو گھوڑا اور وہ کوچوان میاں

Meri Shairi: Adnan Ki Shaadi Per

مسعود

Meri Shairi: Adnan Ki Shaadi Per

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں،۔ ایک پردسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکے قلم خونِ جگر کی روشنائی سے لکھتا ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ تلخ ہے، ہضم مشکل سے ہوتی ہے، پردسی جو اپنے دل کا اظہار شاعری میں بھی کرتا ہے

Add Comment

Click here to post a comment