Meri Shairi Shab-o-Roz

Esha Ki Shaadi Per

Meri Shairi: Esha Ki Shaadi Per
Esha Ki Shaadi Per

دل سے نکلیں تھیں جو صدائیں تیری
خدا نے سن لی ہیں سب دعائیں تیری
ٹل گئی ہیں محبت کی سب بلائیں تیری
وفاؤں میں سجی ہیں سب ادائیں تیری

یہ سفر، یہ راہیں، یہ ہجر، یہ مراحل
ہر قدم مسرتوں میں جگمگائیں عشاء
دعاؤں میں رخصت تجھے کر رہی ہیں
اِک دوست کی بے نور تمنائیں عشاء

مسعود

logo

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں ہے۔ ایک پردیسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکا قلم اس وقت لکھتا ہے دل درد کی شدت سے خون گشتہ ہو جاتا ہے اور اسکے خونِ جگر کی روشنائی سے لکھا ہوئے الفاظ وہ تلخ سچائی پر مبنی ہوتے ہیں جو ہضم مشکل سے ہوتے ہیں۔۔۔ مگر یہ دیوانہ سچائی کا زہر الگنے سے باز نہیں آتا!

Add Comment

Click here to post a comment

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Pegham

FREE
VIEW