آہٹ

جب اس کی نوازش ہوتی ہے

Basheer Badr - Aahat
[nk_awb awb_type=”color” awb_color=”#72FFFF”][dropshadowbox align=”none” effect=”horizontal-curve-bottom” width=”auto” height=”” background_color=”#00FABD” border_width=”5″ border_color=”#014333″ ]
بشیربدر – مجموعۂ کلام: آہٹ [/dropshadowbox] [dropshadowbox align=”none” effect=”horizontal-curve-bottom” width=”auto” height=”” background_color=”#00FABD” border_width=”5″ border_color=”#014333″ ]

جب اس کی نوازش ہوتی ہے، یہ معجزہ تب ہو جاتا ہے
الفاظ مہکنے لگتے ہیں، کاغذ بھی ادب ہو جاتا ہے

اس کی ٹھوکر میں ہوتی ہے، ساری دنیا کی شہنشاہی
دربارِ مدینہ میں جب بھی، دیوانہ طلب ہو جاتا ہے

یہ آگ، یہ مٹی، یہ پانی، یہ آنچل کی گلریز ہوا
پھر کچھ نہیں رہتا اپنا جب پیسہ بھی رب ہو جاتا ہے

بارش کے بعد پہاڑوں پر قالین بچھا دیتا ہے خدا
یہ دل کے اجڑا ریگستاں بھی شہرِ طرب ہو جاتا ہے

اک شعر غزل کا دنیا کی تنقید سے بالا تر جانو
سو مطلب اس میں ہوتے ہیں، جو بے مطلب ہو جاتا ہے

پنڈت، جولاہا کہلایا، من لاکھ ایس فقیری میں
جس پر سونا چاندی برسے، وہ عالی نسب ہو جاتا ہے

[/dropshadowbox][/nk_awb]

 

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں ہے۔ ایک پردیسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکا قلم اس وقت لکھتا ہے دل درد کی شدت سے خون گشتہ ہو جاتا ہے اور اسکے خونِ جگر کی روشنائی سے لکھے ہوئے الفاظ وہ تلخ سچائی پر مبنی ہوتے ہیں جو ہضم مشکل سے ہوتے ہیں۔۔۔ مگر یہ دیوانہ سچائی کا زہر الگنے سے باز نہیں آتا!

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Pegham Network Community

FREE
VIEW