تنہا تنہا

راتیں ہیں اُداس دن کڑے ہیں

Ahmed Faraz
راتیں ہیں اُداس دن کڑے ہیں

راتیں ہیں اُداس دن کڑے ہیں
اے دل ترے حوصلے بڑے ہیں

اے یاد حبیب ساتھ دینا
کچھ مرحلے سخت آپڑے ہیں

رُکنا ہواگر تو سو بہانے
جانا ہوتو راستے بڑے ہیں

اب کیسے بتائیں وجہ گریہ
جب آپ بھی ساتھ روپڑے ہیں

اب جانے کہاں نصیب لے جائے
گھر سے تو فراؔز چل پڑے ہیں

احمدفراز – تنہا تنہا


urdubazm

 

About the author

Masood

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں ہے۔ ایک پردیسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکا قلم اس وقت لکھتا ہے دل درد کی شدت سے خون گشتہ ہو جاتا ہے اور اسکے خونِ جگر کی روشنائی سے لکھے ہوئے الفاظ وہ تلخ سچائی پر مبنی ہوتے ہیں جو ہضم مشکل سے ہوتے ہیں۔۔۔ مگر یہ دیوانہ سچائی کا زہر الگنے سے باز نہیں آتا!

Add Comment

Click here to post a comment

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Pegham Network Community

FREE
VIEW