تنہا تنہا

برہم سفر ہے آبلہ پادیکھتے رہو

Ahmed Faraz
[nk_awb awb_type=”color” awb_color=”#72FFFF”] [dropshadowbox align=”none” effect=”horizontal-curve-bottom” width=”auto” height=”” background_color=”#00a0f2″ border_width=”5″ border_color=”#1b10a9″ ]
برہم سفر ہے آبلہ پادیکھتے رہو [/dropshadowbox]

[dropshadowbox align=”none” effect=”horizontal-curve-bottom” width=”auto” height=”” background_color=”#42e8df” border_width=”5″ border_color=”#1b10a9″ ]

برہم سفر ہے آبلہ پادیکھتے رہو
یاروپلٹ پلٹ کے ذرا دیکھتے رہو

کس کس کو اپنی اپنی رفاقت پہ زُعم ہے
ہوتا ہے کون کون جُدادیکھتے رہو

ہر فصل گل ہے غیر یقینی سی ان دنوں
صر صر چلے کہ باد صبا دیکھتے رہو

سُنتے رہو کہ وقت نے بدلی ہے اگنی
دم بھر میں انقلاب ہوا دیکھتے رہو

تھا کل تو ایک نعہرہ منصور بھی گراں
اور اب کہ سینکڑوں ہیں خدادیکھتے رہو

یاروپلک جھپکتے ہی لٹتے ہیں قافلے
یاں خودکشی ہے نعزش پادیکھتے رہو

احباب کوئے دار ورسن تک پہینچ گئے
اور تم فراؔز دست صبا دیکھتے رہو

[/dropshadowbox][dropshadowbox align=”none” effect=”horizontal-curve-bottom” width=”auto” height=”” background_color=”#00a0f2″ border_width=”5″ border_color=”#1b10a9″ ]

احمدفراز – تنہا تنہا

[/dropshadowbox][/nk_awb]

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں ہے۔ ایک پردیسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکا قلم اس وقت لکھتا ہے دل درد کی شدت سے خون گشتہ ہو جاتا ہے اور اسکے خونِ جگر کی روشنائی سے لکھے ہوئے الفاظ وہ تلخ سچائی پر مبنی ہوتے ہیں جو ہضم مشکل سے ہوتے ہیں۔۔۔ مگر یہ دیوانہ سچائی کا زہر الگنے سے باز نہیں آتا!

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Pegham Network Community

FREE
VIEW