آہٹ

شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں

Basheer Badr - Aahat
[nk_awb awb_type=”color” awb_color=”#72FFFF”][dropshadowbox align=”none” effect=”horizontal-curve-bottom” width=”auto” height=”” background_color=”#00FABD” border_width=”5″ border_color=”#014333″ ]
بشیربدر – مجموعۂ کلام: آہٹ [/dropshadowbox] [dropshadowbox align=”none” effect=”horizontal-curve-bottom” width=”auto” height=”” background_color=”#00FABD” border_width=”5″ border_color=”#014333″ ]

شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں
زلف کی چال چلی ہیں گلیاں
بند دروازے، مجلد ناول
داستانوں سے بھری ہیں گلیاں
کمرے، دروازے، دریچے خاموش
چلمنیں تاک رہی ہیں گلیاں
ْکالی مہریںٗ سے بھرا خط پا کر
سسکیاں بھرتی رہیں ہیں گلیاں
ایک لمحے کو ٹھہرا جانے دو
مجھ کو پہچان ہی ہیں گلیاں
رات شبنم گری کچھ حد سے سوا
یا بہت روتی رہی ہیں گلیاں
کون آتا ہے یہاں کس کے لیے
سب کو پہچان گئی ہیں گلیاں
میرے ہاتھوں کی لکیروں کی طرح
آسماں پر بھی بچھی ہیں گلیاں
بہتے آنسو ترے دامن کی طرف
شہر کی سمت چلی ہیں گلیاں
ان میں مل جائے بھولے بچھڑے
دل میں ایسی بھی کئی ہیں گلیاں
بدرؔ تاریخ کے صفحوں میں نہیں
میری آنکھوں میں بسی ہیں گلیاں

[/dropshadowbox][/nk_awb]

 

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں ہے۔ ایک پردیسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکا قلم اس وقت لکھتا ہے دل درد کی شدت سے خون گشتہ ہو جاتا ہے اور اسکے خونِ جگر کی روشنائی سے لکھے ہوئے الفاظ وہ تلخ سچائی پر مبنی ہوتے ہیں جو ہضم مشکل سے ہوتے ہیں۔۔۔ مگر یہ دیوانہ سچائی کا زہر الگنے سے باز نہیں آتا!

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Pegham Network Community

FREE
VIEW