Current Affairs Meri Tehreerein

Afghanistan War: Ameriki Darindon Ki Sa’faaki

Afghanistan War: Ameriki Darindon Ki Sa'faaki
war criminal

Afghanistan War: Ameriki Darindon Ki Sa’faaki

امریکی درندوں کی سفاکی

…تو پھر امریکی ظالموں نے افغانستان میں ایک اورجنگی جرم کو سرانجام دے دیا! نہتے شہریوں کی خوشیوں بھری بارات پہ اپنے جدید ترین اصلحے سے بمباری کر کے۴۰ بے قصور انسانوں کی جان لے لی اورنجانے کتنے ہی افراد اس ’حملے‘ میں زخمی کردئیے۔مگر حملہ تو ایک ایسا مخالف پہ کیا جاتا ہے جس کے پاس جدید ترین اصلحہ ہو اور جس کی فوج مقابلے میں آئی ہو مگر امریکیوں نے تونہتے شہریوں پہ حملہ کیا ہے جس میں زیادہ تر تعداد خواتین اور بچوں کی تھی۔

امریکی لٹیروں کے مطابق باراتیوں نے امریکی جہازوں پر فائرنگ کی تھی ۔ کیا مضحکہ خیز بکواس ہے!!! ایک عوام جسے تم نے بیدردی سے ، سفاکوں کی طرح قتل کر دیا ہے وہ تمہارا مقابلہ کرے گی ؟؟؟اور وہ بھی اپنی بندوقوں کے ساتھ(!) جبکہ ہر انسان جانتا ہے کہ پٹھان شادی پر ہوائی فائرنگ کرتے ہیں۔ کیا ایک ہاری ہوئی قوم، جس پر تم ظالموں نے مکمل طور پر سیاسی، فکری، علمی اور عسکری فوقیت حاصل کر لی ہے اس کے چند باراتی تمہارا مقابلہ کریں گے؟؟؟ظالموں اپنے بیان میں تھوڑی جان تو پھونک لو، اور ایک جنگی جرم کو چھپانے کی کوشش مت کرو!! میں یہ سمجھتا ہوں امریکہ war criminals سے بھرا پڑا ہے اور بش ان کا لیڈر ہے!مگر دنیا میں کس کو جرأت ہے کہ انہیں انسانی حقوق کی عدالت میں لا کر کھڑا کرے؟؟

افسوس صد افسوس! اس واقعے کو دنیا بڑی آسانی سے بھول جائے گی اور کسی بھی ظالم امریکی جس کے ہاتھ ان معصوم اور بے گناہ بچوں، عورتوں اور بے کسوں کے خون سے لتے پڑے ہیں، ان میں سے کسی ایک کو دنیا مجرم کہنا تو درکنار، ان سفاکوں کو، قاتلوں کومجرم بھی نہیں کہے گی۔اور جب ایک ہارے ہوئے ملک کی بھاگ دوڑایسے لوٹوں کے ہاتھ میں ہو جنہیں بنا کوشش کیے حکومت مل جائے وہاں انصاف پانا ناممکن ہوتا ہے، بلکہ خودافغان حکومت اس واقعے کو دنیا کی نظروں میں تحقیر کر دے گی۔

مگراے اللہ تُوجانتا ہے کہ کیا ہوا ہے۔گوکہ یہ بات تو میں بھی جانتا ہوں کہ تیرا حکم ہے کہ:
’’….ایسا نہ سمجھنا کہ خدا ان ظالموں کے اعمال سے غافل ہے، اور یہ جو فوراً ان پر
عتاب نازل نہیں ہوتا، اس کی وجہ ہے کہ اللہ نے ان کو مہلت دے رکھی ہے….‘‘
اور یہ کہ..
’’ظالم کی رسی دراز ہے‘‘

مگر اے اللہ کب تک تیرے نام لیوا، بے دین سفاکوں کی گولیوں کا نشانہ بنتے رہیں گے؟؟کب تک امریکی افغانستان میں، ہندو لٹیرے کشمیر میں، روسی ظالم چیچنیا میں اور یہودی خبیث فلسطین میں مسلمانوں کی زندگیوں سے ہولی کھیلتے رہیں گے؟؟؟کبھی میں سوچتاہوں وہ دن کب آئے گا جب اللہ کے نام لیوا سکون کی زندگی بسر کریں گے اور یہ سفاک، ظالم، کینہ پرور، شیطان کے پیروکارعتاب میں ہوں گے، کب؟؟؟

مسعوؔ د  – 2 جولائی 2002

Afghanistan War: Ameriki Darindon Ki Sa’faaki

 

About the author

Masood

ایک پردیسی جو پردیس میں رہنے کے باوجود اپنے ملک سے بے پناہ محبت رکھتا ہے، اپنے ملک کی حالت پر سخت نالاں،۔ ایک پردسی جس کا قلم مشکل ترین سچائی لکھنے سے باز نہیں آتا، پردیسی جسکے قلم خونِ جگر کی روشنائی سے لکھتا ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ تلخ ہے، ہضم مشکل سے ہوتی ہے، پردسی جو اپنے دل کا اظہار شاعری میں بھی کرتا ہے

Add Comment

Click here to post a comment